Blog

ہمارے بلاگ کے حصہ میں انٹرنیٹ پر موجود اردو کے معیاری مواد کو شائع کیا جاتا ہے۔ فی الوقت زیادہ تر مواد مشہور ویب سائٹ بلاگستان سے آپ تک پہنچایا جا رہا ہے۔
no-cover
Blog

طبعیات کا ایک مشہور لطیفہ ہے کہ ایک دفعہ سائنسدان ہائزنبرگ، شروڈنگر اور اوھم گاڑی میں جارہے تھے۔ ہائزنبرگ گاڑی چلا رہا تھا کہ ایک ٹریفک پولیس والے نے انکو تیز رفتاری کرنے پر روک لیا۔ پولیس افسر نے ہائزنبرگ سے پوچھا۔ پولیس افسر: جناب، آپکو علم ہے کہ آپ کس رفتار سے سفر کر رہے تھے؟ہائزنبرگ: جی نہیں، لیکن مجھے اس بات کا ضرور علم ہے کہ میں کہاں موجود ہوں۔پولیس افسر: آپ ۳۵ کی...

Wednesday, 05 August 2015
Like
132
0
no-cover
Blog

غزل اک عجب ہی سلسلہ تھا، میں نہ تھامجھ میں کوئی رہ رہا تھا ، میں نہ تھا میں کسی کا عکس ہوں مجھ پر کُھلاآئینے کا آئینہ تھا ، میں نہ تھامیں تمھارا مسئلہ ہرگز نہ تھایہ تمھارا مسئلہ تھا، میں نہ تھاپھر کُھلا میں دونوں کے مابین ہوںاِک ذرا سا فاصلہ تھا ، میں نہ تھاایک زینے پر قدم جیسے رُکیںتری رہ کا مرحلہ تھا، میں نہ تھاوہ جو اک گم کردہ رہ تھا دشت میںوہ تو میرا رہنما تھا، میں نہ...

Wednesday, 05 August 2015
Like
153
0
no-cover
Blog

خیبر پختونخوا اور صوبائی دارالحکومت پشاور جہاں کی ہچکولے کھاتی معیشت کو سنبھالا دینے اور دوبارہ پاؤں پر کھڑا کرنے کی ضرورت ہے وہاں ضلعی انتظامیہ پشاور نے اختیارات سے تجاوز کرکے فائیو سٹار سمیت گنتی کے چند دیگر ہوٹل اور ریسٹورنٹ پر چھاپے مار کر سرمایہ کاروں کو بدظن کرنے کی کوشش کی ہے۔یہ ہیں وہ الفاظ جو ہمارے صوبے کے مؤقر روزنامہ مشرق نے اپنے آج تین اگست کے روزنامہ کے...

Wednesday, 05 August 2015
1
118
0
no-cover
Blog

سنبھل سنبھل کر پاؤں رکھنے سے لے کر ذہنی یکسوئی تک توازن کا رکھنا بہت ضروری ہوتا ہے۔کشتی بنانے والا اس بات کا خیال رکھتا ہے کہ پانی میں کشتی کا توازن قائم رہ سکے اور سفر کرنےوالے محفوظ بھی رہیں اور پار بھی لگ جائیں۔یہی سوچ اسے سفر کرنے والوں سے ممتاز رکھتی ہے۔کیونکہ وہ اپنے فن میں یکتا ہوتا ہے۔ تند وتیز لہروں سے نبردآزما ہونے کے لئے انتہائی باریک سوراخ بھی در خوراعتنا...

Wednesday, 05 August 2015
2
108
0
no-cover
Blog

میں نے اُس منہ کو بھی کھانا دیا جس نے مجھ پر بہتان تراشی کیمیں نے اُس کے چہرے سے بھی آنسو پونچھے جس نے مجھے رُلایامیں نے اُسے بھی سہارا دیا جس نے مجھے گرانے میں کسر نہ چھوڑیمیں نے اُن لوگوں کے ساتھ بھی بھلائی کی جو میرے لئے کچھ نہیں کر سکتےمیں نے اُن لوگوں کی بھی مدد کی جنہوں نے میری پیٹھ میں چھُرا گھونپا یہی کہیں گے نا ۔ کہ میں پاگل ہوں ؟ ؟ ؟ لیکن میں اپنے آپ کو دوسروں کی...

Wednesday, 05 August 2015
Like
92
0
no-cover
Blog

محبت اور کہانی میں کوئی رشتہ نہیں ہوتامگر میری محبت توکہانی ہی کہانی ہےکوئی راجہ نہ رانی ہےمحبت کی کہانی تومسافت ہی مسافت ہےضرورت کی مسافت میںمسافر واپسی کے سارے امکان پاس رکھتا ہےمحبت کی مسافت میںمسافر کے پلٹتے کا کوئی رستہ نہیں ہوتاوہ ساری کشتیاں اپنیجلا دیتے ہیں ساحل پرکے نا - امید ہونے پرپلٹنا بھی اگر چاہیںتو واپس جا نہیں پائیںوہیں غرقاب ہو جائیںمحبت کی کہانی میں...

Wednesday, 05 August 2015
Like
130
0
no-cover
Blog

ماسٹرز کے دوران ہی دماغ پر پی ایچ ڈی PhD کا بھوت سوار ہو چکا تھا اور دل ہی دل میں خود کو ڈاکٹر کہلوانا شروع کردیا تھا اور زندگی کی واحد خواہش یہی رہ گئی تھی کہ جلد از جلد پی ایچ ڈی میں داخلہ ہو جائے تاکہ بقیہ زندگی امن و آتشی سے گزر سکے اور لوگ ڈاکٹر بلا سکیں- اصلی ڈاکٹر بننے کے قابل تو نہیں تھے کہ سوئی کی نوک دیکھ کر ہی ہوش جاتا رہتا ہے اور واحد طریقہ ڈاکٹر بننے کا یہی بچتا ہے...

Wednesday, 05 August 2015
Like
97
0
no-cover
Blog

نوٹ: 'صلہ عمر' پر تحاریر صرف اظہار اور لطف کی غرض سے لکھی جاتی ہیں۔ ان میں مقصدیت تلاش نہ کریں۔ مزید براں، اگر آپ سنجیدہ موضوعات کی تلاش میں ہیں تو یہ بلاگ آپ کے لیے نہیں ہے۔ شکریہ) --- کئی روز سے سوچ رہا تھا کہ کچھ لکھوں۔ ادھ بُنی 'نئی پرانی کہانی' کی تازہ قسط بھی لکھی ۔ کچھ اور بھی لکھا مگر بات یہ ہے کہ وہ ادب کیا، خود میرے اپنے اخلاق کے معیار سے بھی کہیں کمتر...

Wednesday, 05 August 2015
Like
138
0
no-cover
Blog

دم گھٹنے والے حبس کی شدت ختم کرتی ہلکی ہلکی پھوار میں اور اپنے پرسکون گھر کےلان میں شام کی چائے کی چسکیاں لیتے ہوئے کسی کی پرانی یادوں کو پرولنا کتنا خوبصورت لگتا ہے۔۔۔۔بتانے والا چاہے وہیل چئیر پر ہی کیوں نہ بیٹھا ہو وہ بھی اتنے رسان سے اُن نامہربان لمحوں کا تذکرہ کرتا ہے جیسے یہ کل ہی کی بات ہو۔۔کوئی بھولا بسرا قصہ سناتے ہوئے آنکھ میں جلتی بجھتی شمعیں بچپن کی...

Wednesday, 05 August 2015
Like
105
0
no-cover
Blog

گر آپ نے اسی یا نوے کی دہائی میں انٹرمیڈیٹ کیا ہے تو آپکو اچھی طرح یاد ہوگا کہ میڑک کے بعد کسی سرکاری کالج میں داخلہ لینا کس قدر مشکل، کٹھن اور صبر آزما مرحلہ ہوا کرتا تھا جس سے نا صرف طلبہ و طالبات بلکہ ان کے والدین بھی گزرتے تھے۔ میٹرک کا...

Wednesday, 05 August 2015
1
134
0