Blog

ہمارے بلاگ کے حصہ میں انٹرنیٹ پر موجود اردو کے معیاری مواد کو شائع کیا جاتا ہے۔ فی الوقت زیادہ تر مواد مشہور ویب سائٹ بلاگستان سے آپ تک پہنچایا جا رہا ہے۔
no-cover
Blog

انیس سو پینتیس کی دنیا کی تصویر بناتی یہ فلم اس زمانے کے بڑے مسئلے کالے اور گورے کے فرق کو ساتھ ساتھ لیکر چلتی ہے۔جسی اوینز جس نے انیس سو چھتیس کے اولمپکس میں چار میڈل جیتے اس کی یونیورسٹی زمانے سے لیکر اولمپئین بننے کی سچی داستان ہے۔فلم کی کہانی موٹی ویشنل ہے اور مکالمے بہت خوبصورت اور جاندار ہیں۔ ۔۔۔۔ایک سین کی کہانی ہماری زبانی ملاحظہ ہو۔بلیک کمیونٹی کے کچھ لوگ یہ...

Monday, 30 May 2016
Like
77
0
no-cover
Blog

تو ثابت ہو چکا (بغیر ثابت کئے)کہ پاکستان کے کاروباری افراد کی ایک لمبی فہرست پانامہ کے ساحلوں پر اپنے خزانے دفناتی آئی ہے، وزیراعظم کے بچے ، عمران خان کے قریبی، جنگ کے کرتا دھرتا، اور بے شمار ، حتی کہ اب اتنی تعداد میں لوگوں کے نام نکل آئے ہیں کہ لگتا ہے یہ بھی کوئی ہم جنس پرستی قسم کی فیشن ایبل بیماری ہو گی ، جس میں اردوگرد درجنوں لوگ اچانک دریافت ہوئے ہیں، اور پھر انہوں...

Tuesday, 10 May 2016
Like
71
0
no-cover
Blog

کبھی کبھی دل ڈوبنے لگتا ہے، زندگی کسی بند گلی کے آخری کونے میں داخل ہوئی محسوس ہوتی ہے، دوست اور بہی خواہ بہت دور لگنے لگتے ہیں، اپنوں کو پکارنا بھی مشکل ہو جاتا ہے، تنہائی ایسے سبھی احساسات کو دو آتشہ کر دیتی ہے، اور خصوصا جب آپ نے بڑے بڑے خواب دیکھ رکھے ہوں تو حقیقت کی دنیا کے سفر میں راستے کے کانٹے بار بار پیروں کو چھلنی کرتے ہیں۔ایسا نہیں کہ میں کسی اور کی زندگی سے...

Wednesday, 04 May 2016
Like
73
0
no-cover
Blog

کل ایک پرانے آشنا سے ملاقات ہوئی، کچھ چار برسوں بعد بس یونہی راہ چلتے ہوئے، کہنے لگے سنائیے آپ کے منصوبوں کا وہ جو آپ کہہ رہے تھے کہ آپ تو کوئی زرعی فارم وغیرہ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں، مجھے یاد آیا کہ ہاں ایک وقت میں ، میں نے ایسا بھی کچھ سوچا تھا کہ ڈنمارک میں کچھ زمین لے کر زمیندارہ ہی شروع کر لیا جائے، اب بھی جتنے لوگوں سے ملتا ہوں ان کو مستقبل میں ہونے والے منصوبوں کی...

Tuesday, 03 May 2016
Like
69
0
no-cover
Blog

میری اگلی منزل پرتگال کا دارلحکومت لزبن تھا، سمندر کے کنارے واقع اس ساحلی شہر میں وہ سب کچھ تھا جس کی امید کی جا سکتی تھی، غیر ملکیوں کو راستہ سمجھانے والے مہربان لوگ، بڑے بڑے شاپنگ مالز، سیاحت کو فروغ دینے والے ادارے اور سیاحت سے متعلق ڈھیروں سروسز جس میں اوپن چھتوں والی سیاحتی بسیں، ایک کنارے سے دوسرے کنارے جاتے ہوئے بحری جہاز، اور لزبن میں تو پانی پر چلنے والی بسیس،...

Saturday, 30 April 2016
Like
48
0
no-cover
Blog

ایگری ہنٹ کو آغاز کئے سات سال بیت گئے، ہم نے کوشش کی کہ آپ کو زراعت کے متعلق جدید تر معلومات دیں، پچھلے سات سال ہمارا فوکس زراعت کا پڑھا لکھا طبقہ تھا، سٹوڈنٹ اور سکالرز تھے اس لئے گفتگو کا میڈیم بھی زیادہ تر انگریزی زبان میں ہی رہا۔ زراعت کے امتحانوں میں کامیاب ہونے والے بے شمار طالب علموں کے پیغامات مجھے یہ باور کراتے آئے ہیں کہ ہم درست سمت میں گامزن ہیں، لیکن پاکستان...

Saturday, 09 April 2016
Like
74
0
no-cover
Blog

ناشتہ کرنے کے لئے فریج کا جائزہ لیا ، کسی دوست کی طرف سے آیا ہوا مچھلی کا سالن، کچھ کل کی بچی ہوئی روٹی اور انگریزی والی بریڈ کے سوا کچھ نہ تھا، روٹی کو پانی لگا کر گرم کیا، اور سالن کے ساتھ کھانے لگا تو دل میں ایک گلہ سا آ گیا کہ گھر سے اتنی دور پیسے کمانے آیا ہوں، یہاں یہی سوکھی روٹیاں مقدر ہوگئی ہیں، ابھی گلہ کچھ تصویر بھی نا بنا پایا تھا کہ گذشتہ رات میکڈونلڈ کے ویسٹ بن...

Friday, 08 April 2016
Like
96
0
no-cover
Blog

گھڑی بند پڑی ہےمیرے گھرکی دیوار پر جو سجی ہےوہ گھڑی کب کی تھمی ہوئی ہےسوا تین بجے ہیں شایدہر رات مجھے لگتا ہے کہ شاید یہ گھڑی اس رات کے سوا تین بجے تھمی ہوگیجس رات تم نےرات بھر میرے ساتھ باتیں کرنے کا وعدہ کیا تھااورسوا تین بجے تم سو گئیں تھیںیا شاید یہ اس دن کے سوا تین ہیںجس دن تم نے مجھ سے دور چلے جانا تھاگھڑی پر سوا تین بجے ہیںاس گھڑی کو چلانے کو تین روپے کا سیل درکار...

Friday, 08 April 2016
Like
78
0
no-cover
Blog

پانامہ لیکس کو خفیہ دستاویزات کی اب تک سب سے بڑی لیک سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔ جس میں گیارہ ملین سے زائد دستاویزات دنیا کے بہتر کے قریب موجودہ و سابق ارباب اختیار کی دولت کو چھپانے کی داستانوں کے ثبوت لئے ہوئے ہے۔ یہ دستاویزات پانامہ کی ایک کمپنی موساک فونسیکا سے لیک ہوئی ہیں جس کا کام ایسے لوگوں کے لئے چھترکمپنیاں بنانا تھا جہاں پیسے والے اپنا پیسہ با آسانی چھپا سکیں۔ ان...

Monday, 04 April 2016
Like
105
0
no-cover
Blog

بات کچھ بیس سال پرانی ہے ، گورنمنٹ کالج ملتان کے ہاسٹل فرید ہال میں رہا کرتے تھے، ہمارے جونئیرز میں سے ایک جونئیر نے دوسرے جونئیر سے کہا تمہاری والدہ کا انتقال ہو گیا ہے اور وہ نشتر ہسپتال ملتان میں ہیں، وہ بے چارہ روتا پیٹتا نشتر ہسپتال پہنچا، مختلف وارڈز کے دھکے کھائے ، ایمرجنیسی وارڈ گیا، لیکن کچھ پتہ نہ چلا، موبائل فون اس دور میں ہوا نہ کرتے تھے۔ جس کو ماں کے مرنے کا...

Friday, 01 April 2016
Like
63
0
Jazba Radio