Blog

ہمارے بلاگ کے حصہ میں انٹرنیٹ پر موجود اردو کے معیاری مواد کو شائع کیا جاتا ہے۔ فی الوقت زیادہ تر مواد مشہور ویب سائٹ بلاگستان سے آپ تک پہنچایا جا رہا ہے۔
no-cover
Blog

تعلقات کے حوالے سے یہ بات بہت عام سی ہے کہ لوگ لوگوں سے نہیں ان کے مراتب سے تعلقات استوار کرتے ہیں، حد تو یہ ہے کہ ان کے نام تک بھول جاتے ہیں اور اور ان کے عہدوں کے نام سے مخاطب ہوتے ہیں۔ ایسے مشکل دور میں کوئی عہدیدار اچھا لگے اور اس کا نام بھی یاد آ جائے تو میرے خیال میں یہ اس عہدے کی نہیں، اس عہدے دار کی کامیابی ہے۔کوپن ہیگن میں گذارے سات آٹھ سالوں میں ، میں نے یہ دیکھا ہے...

Wednesday, 27 June 2018
Like
19
0
no-cover
Blog

اس مضمون کو پڑھ کر آپ مجھے مذہب بیزار یا پاگل سمجھنا شروع کردیں تو آپ اسے کسی دیوانے کی بڑبڑاہٹ سمجھ کر معاف کردیجئے گا جو اپنے وطن کی ترقی کے خوابوں میں کھو کر دماغ کھو بیٹھا ہے۔پچھلے دنوں ایمسٹرڈم جانے کا اتفاق ہوا، وہاں پر بھنگ کے پودے پر ہونے والا کام اور تحقیق دیکھ کر اس پودے کے جادوئی اثرات کا قائل ہو گیا، وہاں دکانوں پر اس سے بنی ہوئی مصنوعات دیکھ کر میں دنگ رہ گیا...

Monday, 23 April 2018
Like
51
0
no-cover
Blog

گروہوں، قبیلوں، ذاتوں، فرقوں میں بٹے ہوئے ہم دھرتی کے ظالم ترین لوگ ہیں شاید جن کی نظر میں کوئی بھی متفقہ معتبر نہیں، ہمارے لئے محترم ہمارے نشان اور ٹھپوں والے لوگ ہیں اور باقی کے سب کیڑے مکوڑے، کم ذات اور کمینے۔ ارے لوگو کیا ہو گیا ہے تم کو، ہر بات میں سازش کیوں ڈھونڈنے بیٹھے ہو، ہر کسی کو پیلی آنکھوں سے کیوں دیکھتے ہو؟ ہر کوئی تہماری نظر میں برا کیوں ہے؟ خود کو کب سے...

Friday, 16 March 2018
Like
76
0
no-cover
Blog

ابھی فیس بک کی ساری دیوار سوگوار ہوئی پڑی ہے ، عاصمہ جہانگیر آہ عاصمہ جہانگیر بھی چلی گئیں، کسی نے کہا کہ مظلوم کی آواز رخصت ہوئی، کسی نے کہا کہ آمریت کے خلاف ایک آواز خاموش ہو گئی، کسی نے کہا کہ جدو جہد کا ایک باب تھا بند ہوا، کسی نے کہا کہ اکثریت مردوں سے زیادہ مرد تھی وہ عورت۔۔۔۔۔اب احباب کیا کیا نہ کہیں گے، اور حد تو یہ ہے کہ کچھ روز پہلے ہی اس کی ذات ہر طرح کے حملوں کی...

Sunday, 11 February 2018
Like
97
0
no-cover
Blog

وہ گرمیوں کی چھاوں تھیوہ سردیوں کی دھوپ تھیاحمد فراز کی ایک نظم کے مصرعے کسی سانولی سلونی حسینہ کی یاد میں ہیں، جن کی یاد انہیں ہر دم نہیں کبھی کبھار آیا کرتی ہے ، ہماری دیسی شاعری میں سردیوں کی دھوپ اپنے اندر ایسی گرمی رکھتی ہے کہ آدمی کو موسم سرما بھی لطف دینے لگتا ہے۔۔۔۔لیکن ہمارے ہاں آجکل سکینڈے نیویا میں جیس سردی پڑ رہی ہے وہ دیکھنے میں بہت پرلطف دکھائی دیتی ہے،...

Tuesday, 06 February 2018
Like
105
0
no-cover
Blog

فیس بک کی پہنچ مر چکی، آپ ہزاروں دوست رکھتے ہیں، لیکن آپ کی بات درجنوں تک پہنچ رہی ہے، میری ایک تصویر جس کو سب سے زیادہ لائک ملے ہوں گے وہ نو سو کے قریب ہوں گے، پانچ ہزار دوستوں میں نو سو لائک کچھ اتنے زیادہ بھی نہیں ہوتے لیکن فیس بک نے اپنی ریچ اس سے بھی بہت کم کردی ہے، میں نے پچھلے دنوں پروفائل پکچر بدلنے کے کچھ تجربات کئے، اڑھائی سو سے تین سو پروفائل پکچر لائک، پچاس ساٹھ...

Tuesday, 06 February 2018
Like
105
0
no-cover
Blog

بہاوالدین زکریا یونیورسٹی میں طالبات اور پروفیسر کی غیر اخلاقی ویڈیو کی باز گشت اخبارات میں سنائی دی گئی، جو ہوا اچھا نہیں ہوا، پاکستان کے اعلی تعلیم بانٹنے والے اداروں میں تعلیم بانٹنے والوں کا اس مقام تک چلے آنا ایک مرض کی نشاندہی ہے، جس پر ہم بات بھی نہیں کرنا چاہتے۔اس سارے معاملے سے ہٹ کر جو ایف آئی آر طالبہ کی طرف سے درج کروائی گئی ہے۔ وہ ہر طالبہ کو ایک دفعہ ضرور...

Saturday, 03 February 2018
Like
102
0
no-cover
Blog

ابھی ایک میگزین میں پڑھ رہا تھا کہ ویٹنری اسسٹنٹ نے اپنے آفیسر کو اس لئے قتل کر ڈالا کہ اس نے اس کے خلاف کچھ رپورٹ کیا تھا، جس کے نتیجے میں ماتحت کا تبادلہ کر دیا گیا تھا۔ یہ خبر ایک عام سے اخبار کی خبر ہے مین سٹریم میڈیا میں اس کو اتنی کوریج نہیں ملی کہ لوگ اس مظلوم کی حمایت کے لئے اکٹھے ہوتے۔ مقتول کی عمر تصویر دیکھ کر اندازہ کیا جا سکتا ہے ابھی اسے نئ نئی نوکری میں ملک کو...

Wednesday, 31 January 2018
Like
104
0
no-cover
Blog

اب جیسے ڈاکٹر شاہد مسعود پر آن پڑی ہے، اہل سیاسیت اور صحافت اس کے درپے ہیں، کہ اس نے قوم کو ہیجان بیچا، ایسے ہی بات چل نکلی ہے ، آپ پچھلے ایک عشرے میں شہرت پانے والی اینکرز، اور تجزیہ کاروں کے نام لیں، ان میں سے کتنے ہیں جن کے تجزیات پر مغز ہیں۔کچھ ضدی بچوں کی طرح ایک ہی بات دہرا دہرا کر اپنی گفتگو میں وزن پیدا کرتے ہیں، اور کوئی گلے کے بل چیخ چیخ کر، کسی کو اپنی چڑیا کی...

Monday, 29 January 2018
Like
103
0
no-cover
Blog

ٹالن سے سوا چار گھنٹے کی بس لیکر لیٹویا کے دارالحکومت رگا میں موجود ہوں، لکس ایکپریس نام کی یہ بس کمپنی خاصی جانی پہچانی سی لگی، سفر خاصا آرام دہ تھا چھ سات یورو زیادہ خرچ کر کے کچھ زیادہ بہتر سیٹ لینے کی آپشن موجود تھی جس سے فائدہ اٹھایا گیا تھا۔ گوگل نقشوں کے مطابق میرا ہوٹل بس سٹاپ سے تین چار کلومیٹر کی دوری پر تھا، موسم کے بارے میں خبر کچھ اچھی نہ تھی ، بارش کا امکان...

Friday, 05 January 2018
Like
106
0